کبھی الوداع نہ کہنا

وسطی خٹک نے 'شعری انجمن' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏24 جولائی 2014

  1. وسطی خٹک

    وسطی خٹک رکن

    مراسلے:
    7
    کبھی الوداع نہ کہنا
    بس اپنا بنا کے رہنا

    اس پر کچھ اثر ہوا نہ
    اسکا دل نہیں ہے بہنا

    تیری یاد تیری باتیں
    سبھی مرحلوں پہ رہنا

    قاصد ! ایک آرزو ہے
    اسکو شعر میرے کہنا

    تو نے بے پناہ دئے ہیں
    مشکل ہے غموں کو سہنا

    خواہش اب تو ایک باقی
    اس کا فاتحہ ہے کہنا

    وسطی ؔ تیرے بن خفا ہے
    مشکل ہوگیا ہے رہنا

    وسطی ؔ خٹک
  2. josh

    josh رکن

    مراسلے:
    166
    میرا بھی یہی کہنا ہے۔۔اپنا بنا کے رکھنا اپنے ذھن میں رکھنا۔ کبھی الوداع نہ کہنا کبھی الوداع نہ کہنا
  3. وسطی خٹک

    وسطی خٹک رکن

    مراسلے:
    7
    واه جی واہ کیا کہنے آپکے جوش صاحب
  4. josh

    josh رکن

    مراسلے:
    166
    محترم وسطی صاحب ۔ لوگوں نے رمضان کو الوداع کہدیا۔ پیاری پیاری عید کو بھی الوداع کہدیا۔لیکن میں ۔ میں تو یہی کہتا ہوں۔۔میں ہوں آپ ہی کا ساتھی اور آپکا قریں ہون ۔ مجھے الوداع نہ کہنا مجھے الوداع نہ کھنا ۔۔ میں ہوں زخم خوردہ ساتھی مرا کویی بھی نہیں ہے ۔ مجہے الوداع نہ کہنا کبھی الوداع نہ کہنا۔
  5. وسطی خٹک

    وسطی خٹک رکن

    مراسلے:
    7
    حضور یہ تو ہم دونوں کا کہنا ہے
    کوئی ان کے دل سے پوچھے ههه
  6. josh

    josh رکن

    مراسلے:
    166
    وسطی صاحب اللہ آپکو خوش رکھے اور غموں ۔الجھنوں سے نجات دےکر ھمیشہ خوش وخرم رکھے ۔۔ لیکن آپ میری بیکسی پر۔ ھھہ۔کہکر ہنسے ہیں یہ اچھا نہیں لگا۔میں بہت مجبور وبیکس ہوں اسی لیے میں کہتا رہتا ہوں۔۔ میں ہوں بے وطن مسافر مرا نام بے بسی ہے ۔ مرا کویی بھی نہیں ہے جو گلے لگا کے روے ۔
  7. وسطی خٹک

    وسطی خٹک رکن

    مراسلے:
    7
    نہ نہ حضور گو کہ ہم دونوں الگ الگ شخصیات ہیں مگر حال دونوں کا ایک(اندر کا موسم)
    اسلئے میری ہنسی ہم دونوں کی حالت زار پر تهی

    اپکو چونکہ برا لگا اسلئے
    معافی چاہتا ہوں
    سوری
  8. josh

    josh رکن

    مراسلے:
    166
    میرے محترم بھای وسطی صاحب ۔میں آپ سے ہرگز ناراض نہیں ہوں ۔یہ تو دو زندہ دلوں کی کہانی ہے ۔۔ یہ تو دل کی ہے کہانی اسے غلط نہ سمجھنا ۔۔ کبھی الوداع نہ کہنا کبھی الوداع نہ کہنا ۔ مرے لفظ سے اگر کچھ تکلیف ہوگیی ہے۔ اسے غلط معنی دیکر کبھی الوداع نہ کہنا۔۔۔ یہ مقام رہبری ہے بھت محترم ہے ہمدم ۔۔اسے یونہی کچھ سمجھکر کبھی الوداع نہ کہنا ۔۔ کہ سفر کے راستے مین آپ اچانک مل گیے ہیں۔۔ ۔ یہ ہے نعمت الہی اسے الوداع نہ کہنا ۔ گستخی معاف۔

اس صفحے کی تشہیر