پولی گراف ٹیسٹ کیا ہوتا ہے

سلیمان نے 'سیاست و عدالت' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏26 اکتوبر 2017

  1. سلیمان

    سلیمان منتظم

    مراسلے:
    1,594
    پنجاب فورنزک سائنس ایجنسی کی ویب سائٹ کے مطابق پولی گراف مشین ایسا سائنسی آلہ ہے جو کہ بلڈ پریشر، سانس، نبض اور جلد میں ہونے والی جسمانی تبدیلیوں کو اس وقت ناپتا ہے جب ملزم کا بیان ریکارڈ کیا جا رہا ہوتا ہے۔

    یہ خیال کیا جاتا ہے کہ اس طریقہ کار سے اگر ملزم جھوٹ بولے تو اس کے ردِ عمل کا موازنہ سچ بولے جانے والے ردِ عمل سے کیا جا سکتا ہے۔ تاہم اس ٹیسٹ کے درست نتائج کا زیادہ تر دارومدار ٹیسٹ کرنے والے شخص کی مہارت پر ہوتا ہے۔

    ٹیسٹ سے قبل ملزم کو نہیں بتایا جاتا کہ اس کا پولی گراف ٹیسٹ کیا جائے گا۔

    ٹیسٹ سے 24 گھنٹے قبل اس بات کو یقینی بنایا جاتا ہے کہ ملزم اچھی طرح سے آرام کر چکا ہے اور کسی قسم کی دوا کے اثر میں نہیں ہے۔
    • پسند پسند x 1
  2. محمداحمد

    محمداحمد رکن

    مراسلے:
    55
    اچھی بات ہے۔

    ویسے انسان کے جسم میں مذکورہ تبدیلیاں خوف اور کسی دوسرے اثر کے تحت بھی رونما ہو سکتی ہیں۔

اس صفحے کی تشہیر