میری ایک تازہ غزل

agsalafi نے 'شعری انجمن' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏18 اگست 2016

  1. agsalafi

    agsalafi رکن

    مراسلے:
    3
    غزل
    __________________

    از قلم: عبدالغفار زاہد سلفی، بنارس

    زندگی محدود ہو کر رہ گئی
    منزل اب مفقود ہو کر رہ گئی


    راہ میں ہیں ہر طرف دشواریاں
    ہر ڈگر مسدود ہو کر رہ گئی


    اب تملق اک ہنر ہے ساتھیو!
    یہ صفت محمود ہو کر رہ گئی


    اب کہاں فکر ونظر کے آئینے
    شہرت اب مقصود ہو کر رہ گئی


    بد عمل کردار جو اپنا ہوا
    ہر دعا مردود ہو کر رہ گئی


    آندھیاں نفرت کی کچھ ایسی چلیں
    یہ فضا آلود ہو کر رہ گئی

    جو صحافت حق کا تھی اک آئینہ
    وہ بھی نامسعود ہو کر رہ گئی

    دولتِ دنیا کا ہے ایسا خمار
    اب وہی معبود ہو کر رہ گئی

    Sent from my irisX8 using Tapatalk

اس صفحے کی تشہیر