غزل

Asim Raheel نے 'اصلاح سخن' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏13 مارچ 2018

  1. Asim Raheel

    Asim Raheel رکن

    مراسلے:
    5
    کہیں حال کیا ہم نشینوں کے صاحب
    کہ ہیں سانپ سب آستینوں کے صاحب
    ترے وصل میں جیسے صدیاں بھی لمحہ
    ترے ہجر میں دن مہینوں کے صاحب
    نظر آسماں پہ بھی ہے ان کی ہر دم
    بنے ہیں جو مالک زمینوں کے صاحب
    مرے عشق کی شعلہ گرمی سےعاصم
    دھڑکتے ہیں دل آبگینوں کے صاحب
  2. nabeel

    nabeel رکن

    مراسلے:
    56

اس صفحے کی تشہیر