امریکہ داعش کا حقيقی چہرہ

fawad نے 'خبروں کی دنیا' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏17 اپریل 2017

  1. fawad

    fawad امریکی نمائندہ

    مراسلے:
    274
    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ


    #NoToChemicalWeapons


    [​IMG]


    نہتے شہريوں کے خلاف داعش کے مظالم صرف عام ہتھياروں کے استعمال تک ہی محدود نہيں تھے۔

    اس بات کے ٹھوس شواہد ملے ہیں کہ القيارۃ ميں عام شہريوں کے خلاف داعش کی جانب سے کيميائ ہتھياروں کا بے دريخ استعمال کيا گيا۔

    Video: ISIS launches 3 attacks using chemical weapons on Qayyarah - Iraqi News


    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    digitaloutreach@state.gov

    www.state.gov

    https://twitter.com/USDOSDOT_Urdu

    Security Check Required

    https://www.instagram.com/doturdu/

    Us Dot | Flickr
  2. fawad

    fawad امریکی نمائندہ

    مراسلے:
    274
    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ





    "داعش تضادات کا مجموعہ ثابت ہوئ"

    جھوٹ در جھوٹ اور تضادات نے داعش کی حقيقت اور ايجنڈے کو بالکل واضح کر ديا۔

    تونيزيا سے تعلق رکھنے والا داعش کا ايک جنگجو سيرين ڈيموکريٹک فورسز کے ہاتھوں گرفتار ہوا اور اپنے بيانات ميں اس نے اس بات کا اعتراف کيا کہ اس دہشت گرد تنظيم کی سوچ اور طرز فکر تضادات کا مجموعہ ہے۔ انھی وجوہات کی بنياد پر اس نے تنظيم سے عليحدگی کا فیصلہ کيا۔

    يہ ايک ناقابل ترديد حقیقت ہے کہ داعش اور اس کے سرغنہ عام لوگوں پر اپنی مرضی مسلط کرنے کے ليے دہشت اور خوف کو استعمال کر رہے ہيں، اور يہ طرز عمل اسلام سميت دنيا کے تمام مذاہب کی بنيادی تعلميات اور اصولوں کے خلاف ہے۔

    ايک قابل فہم پيغام کا فقدان اور ان کے تشہيری بيانات ميں تسلسل کے ساتھ پاۓ جانے والے تضادات اس حقيقت کو آشکار کر رہے ہيں کہ سياسی اثر ورسوخ کا حصول اور دھونس کے ذريعے اپنی سوچ دوسروں پر مسلط کرنا ہی اس تنظيم کا ہدف اور مقصد ہے۔

    دہشت، خوف اور دھونس ان مجرموں کے ترجيحی ہتھيار ہيں اور انسانيت کے خلاف اپنے جرائم کی توجيح کے ليے مذہبی نعروں کا استعمال ان کی حکمت عملی کا حصہ ہے۔


    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ


    digitaloutreach@state.gov

    www.state.gov

    https://twitter.com/USDOSDOT_Urdu

    USUrduDigitalOutreach - Home | Facebook

    https://www.instagram.com/doturdu/

    Us Dot | Flickr
  3. fawad

    fawad امریکی نمائندہ

    مراسلے:
    274
    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ





    عراق اور موصل کے عام شہری بتدريج اپنی زندگياں بحال کر رہے ہيں اور داعش کے مظالم کے بھيانک واقعات ماضی کا حصہ بنتے جا رہے ہيں، تاہم اب بھی شہری زندگيوں ميں ان مظالم کے ايسے نشانات اور يادگاريں موجود ہيں جو ان تکاليف اور واقعات کی ياد دلاتی ہيں۔

    موصل شہری کے بيچ ميں موجود يہ عمارت بھی انھی ميں سے ايک ہے جو داعش کے زير استعمال تھی اور جس کے ذريعے دہشت گرد تنظيم عام لوگوں پر خوف اور دہشت کے ذريعے اپنی دھاک جمانے کی کوشش کرتی تھی۔ اسی عمارت کی چھت سے ايسے معصوم بچوں اور نوجوانوں سميت عام شہريوں کو زميں پر پٹخا جاتا جو داعش کی قيادت کی نظر ميں اخلاقی جرم کے مرتکب تصور کيے جاتے تھے۔

    داعش کے سرغنہ اس دعوے پر بضد تھے کہ وہ اجتماعی سطح پر عام شہريوں کی بہبود کے ليے خلافت قائم کرنے کے متمنی تھے، تاہم حقيقت ميں ان کے غير انسانی مظالم سے يہ واضح تھا کہ ان کے نزديک سماجی انصاف اور قانون کی بالادستی کا تصور صرف يہی تھا کہ عام شہريوں پر ظلم اور بربريت کے ذريعے اپنا اثرورسوخ اور تسلط بڑھايا جاۓ۔


    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    digitaloutreach@state.gov

    www.state.gov

    https://twitter.com/USDOSDOT_Urdu

    Security Check Required

    Digital Outreach Team (@doturdu) • Instagram photos and videos

    Us Dot | Flickr
  4. fawad

    fawad امریکی نمائندہ

    مراسلے:
    274
    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ





    کسی بھی قسم کی دليل يا تاويل بزدلی کے اس عمل پر پردہ ڈالنے کے ليے کافی نہيں ہے جس ميں داعش کی جانب سے کمسن بچوں کو بطور ہتھيار استعمال کر کے اس پر فخر کيا جاتا رہا ہے۔

    ايک تازہ رپورٹ ميں يہ انکشاف سامنے آيا ہے کہ کس طرح سے داعش سکول کے بچوں کو انتہائ ديدہ دليری سے اپنی صفوں ميں بھرتی کرنے کے ليے استعمال کر رہی تھی۔

    سکول کی ديواروں پر موجود گوليوں کے ان گنت نشانات، سکول کے نصاب ميں زبردستی نفرت انگيز مواد کی شموليت اور نفسياتی طور پر کمسن بچوں کے ذہنوں کو پراگندہ کرنے کے ليے تشہيری مواد کا استعمال ان نقصانات اور تکاليف کا آئينہ دار ہے جس کا سامنا داعش کے غلبے کے دوران رقہ کے عام شہريوں کو تھا۔

    يہ ايک ناقابل ترديد حقيقت ہے کہ داعش کے سرغنہ جس مبينہ "کاميابی" پر فخر کرتے نہيں تھکتے اس کی بنياد تبائ و بربادی اور وہ شہری ہلاکتيں ہيں جو دہشت گردی کی جاری لہر اور ان افراد کی جانب سے خودکش دھماکوں کی مہم کا شاخسانہ ہے جنھيں نظرياتی طور پر برين واش کر کے يہ يقین دلا ديا گيا ہے کہ وہ ايک مقدس تحريک کے ليے اپنی جانيں قربان کر رہے ہيں۔


    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    digitaloutreach@state.gov

    www.state.gov

    https://twitter.com/USDOSDOT_Urdu

    Security Check Required

    https://www.instagram.com/doturdu/

    Us Dot | Flickr
  5. fawad

    fawad امریکی نمائندہ

    مراسلے:
    274
    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ


    داعش کی جانب سے مساجد کی بے حرمتی

    مساجد ميں اسلحے کے ذخائر اور خلافت کے کھوکھلے دعوے

    ستم ظريفی ديکھيں کہ آئ ايس آئ ايس کی جانب سے اسلامی خلافت کے قيام کے پرفريب نعروں کا سہارا ليا جاتا ہے اور خود کو مسلمانوں کے نجات دہندہ کے طور پر پيش کيے جانے کی خواہش کا اظہار بھی کيا جاتا ہے ليکن اپنی مخصوص سوچ کے مخالف ہر آواز کے خلاف پرتشدد کاروائ کی روش نے انھيں اس بات سے نہيں روکا کہ وہ اپنے خونی حملوں کی منصوبہ بندی کے ليے مساجد کو استعمال کريں۔

    تازہ رپورٹ کے مطابق اتحادی افواج نے داعش کے ٹھکانوں کو غير فعال کر ديا جو انھوں نے مساجد کے اندر بنا رکھے تھے۔

    https://www.cnn.com/2018/10/22/politics/us-struck-isis-mosques/index.html


    مسجد کی بے حرمتی اور تھوڑ پھوڑ کی ذمہ داری انھوں دہشت گردوں پر عائد ہو تی ہے جنھوں نے ايک عبادت گاہ ميں اسلحہ جمع کيا اور اسے حملے کے لیے مورچے کے طور پر استعمال کيا۔

    مساجد کو دانستہ اپنی مکروہ کاروائيوں کے ليے استعمال کرنے سے ايک بار پھر يہ بات تو واضح ہو گئ ہے کہ دہشت گرد "شريعت" اور "جہاد" جيسے پرجوش نعرے محض نوجوانوں کے ذہنوں کو ايک خاص رخ دے کر اپنے مقصد کے لیے استعمال کرتے ہيں۔ درحقيقت انکی نام نہاد "جدوجہد" کا مذہب سے کوئ تعلق نہيں ہے۔ بصورت ديگر مسجد کے اندر اسلحے کے ذخائر اکھٹے کر کے عام شہريوں کے خلاف حملوں کی منصوبہ بندی کی کيا توجيہہ پيش کی جا سکتی ہے۔


    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    digitaloutreach@state.gov

    www.state.gov

    https://twitter.com/USDOSDOT_Urdu

    http://www.facebook.com/USDOTUrdu

    https://www.instagram.com/doturdu/

    https://www.flickr.com/photos/usdoturdu/
  6. fawad

    fawad امریکی نمائندہ

    مراسلے:
    274
    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    رقہ ميں پرتشدد انتہا پسندی کے خلاف خواتين کا موثر کردار

    شام ميں خواتين کی ايک تنظيم نے معاشرے ميں انتہا پسند سوچ کو روکنے اور خواتين ميں اس ضمن ميں آگہی اور شعور اجاگر کرنے کے ليے گراہ قدر کوششيں کی ہيں۔




    داعش اور اس جيسی ديگر دہشت گرد تنظيموں نے معاشرے پر جو منفی اثرات مرتب کيے ہيں اور جس طريقے سے کم سن بچوں کو استعمال کر کے انھيں خودکش حملہ آور بنانے کی ترغيب دی ہے، اس پر تو کافی کچھ لکھا جا چکا ہے۔ تاہم داعش کی خونی سوچ نے خواتين پر جو منفی اثرات ڈالے ہيں، اس حوالے سے حقائق پوری طرح اجاگر نہيں کيے گۓ ہيں اور بعض جگہ پر تو انھيں سرے سے نظرانداز ہی کر ديا گيا ہے۔

    ايک حاليہ تحقيقی رپورٹ کے مطابق عالمی دہشت گردی کے بے شمار واقعات ميں خواتين نے عملی کردار ادا کيا ہے۔ اپريل 2013 سے جون 2018 کے درميانی عرصے ميں عراق اور شام ميں جن 41490 غير ملکی شہريوں نے داعش ميں شموليت اختيار کی ان ميں سے 13 فيصد خواتين تھيں۔ علاوہ ازيں 12 فيصد يا 4640 کم سن بچے تھے۔


    https://www.theguardian.com/world/2...ren-joining-isis-significantly-underestimated


    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    digitaloutreach@state.gov

    www.state.gov

    https://twitter.com/USDOSDOT_Urdu

    http://www.facebook.com/USDOTUrdu

    https://www.instagram.com/doturdu/

    https://www.flickr.com/photos/usdoturdu/
  7. fawad

    fawad امریکی نمائندہ

    مراسلے:
    274
    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ


    [​IMG]


    داعش کی بربريت بے نقاب – عراق ميں بڑے پيمانے پر اجتماعی قبروں کا انکشاف


    https://www.express.pk/story/1412138/10/

    اقوام متحدہ کی چشم کشا رپورٹ جس ميں عراق ميں 200 سے زائد اجتماعی قبروں کی تفصيل درج ہے۔ ہزاروں کی تعداد ميں عام عراقی شہری ان قبروں ميں دفن ہيں۔


    http://www.uniraq.com/index.php?opt...es-in-iraq,-says-un-report&Itemid=605&lang=en

    ہر شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والے عراقی مرد، عورتيں اور بچے داعش کی بربريت کی بھينٹ چڑھ گۓ۔ اور يہ وہی داعش ہے جو موصل اور عراق کے دوسرے شہروں پر زبردستی قبضے جمانے کے بعد دنيا کو يہ باور کروانے کی کوشش کر رہی تھی کہ وہ عراقی عوام کی بھلائ اور بہتری کے ليے کوششيں کر رہے ہيں۔

    ان قبروں کی دريافت اور داعش کے غيرانسانی جرائم سے ايک بار پھر يہ حقيقت آشکار ہو گئ ہے کہ عراق کی عوام نے داعش کے درندوں سے اپنے معاشرے کو آزاد کروانے کے ليے کتنی بھاری قيمت چکائ ہے۔ يہ وہ درندے ہيں جو عام شہريوں پر اپنی مرضی مسلط کرنے کے ليے کسی بھی حد تک جانے کے ليے تيار تھے۔

    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    digitaloutreach@state.gov

    www.state.gov

    https://twitter.com/USDOSDOT_Urdu

    http://www.facebook.com/USDOTUrdu

    https://www.instagram.com/doturdu/

    https://www.flickr.com/photos/usdoturdu/

اس صفحے کی تشہیر