عالمی خبر داعش اور طالبان کے مسلح گروہ - ٹھگوں کی آپس کی لڑائ

fawad نے 'خبروں کی دنیا' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏30 جولائی 2018

  1. fawad

    fawad امریکی نمائندہ

    مراسلے:
    278
    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ


    [​IMG]


    افغانستان سے حاليہ دنوں ميں سامنے آنے والی کچھ رپورٹس جن سے خطے ميں داعش اور طالبان کے مختلف دھڑوں کے درميان شديد کشيدگی اور باہمی چپقلش بے نقاب ہو رہی ہے۔


    https://twitter.com/CBSNews/status/1019227717840097281



    افغانستان ميں طالبان پر داعش کے خود کش بمبار کا حملہ – 20 ہلاک


    http://www.xinhuanet.com/english/2018-07/16/c_137328763.htm



    افغانستان کے صوبہ جازوان ميں داعش اور طالبان کے درميان شديد لڑائ جس کے نتيجے ميں دس افراد ہلاک ہو گۓ۔


    https://twitter.com/thenews_intl/status/1019218915761590272

    داعش کے حملے کے نتيجے ميں 15 افغان طالبان ہلاک۔


    دہشت گرد تنظيموں اور ان کے سرغناؤں نے متعدد بار اپنی پرتشدد کاروائيوں سے يہ ثابت کيا ہے کہ ان کا ہدف عام لوگوں پر اپنی مرضی مسلط کرنا ہے۔ امن اور عام شہريوں کے ليے تحفظ کا حصول ان کی حکمت عملی ميں شامل نہيں ہے۔


    چاہے وہ داعش ہو يا طالبان کے مسلح گروہ – يہ دہشت گرد اور انتہا پسند اس بات کا دعوی تو کرتے ہيں کہ وہ بيرونی قوتوں کے خلاف عام لوگوں کی آزادی کے ليے اپنی "جدوجہد" جاری رکھے ہوۓ ہيں۔ تاہم جب انھيں اس بات کا ادراک ہوتا ہے کہ کوئ اور گروہ سياسی اثرورسوخ حاصل کر رہا ہے تو پھر يہ اپنی اصليت سب پر واضح کر ديتے ہيں اور اپنے مخالف دھڑوں کو منظر سے ہٹانے کے ليے وہی خونی حربے استعمال کرتے ہيں جو ان کی ترجيحی حکمت عملی رہی ہے۔


    اس حوالے سے کوئ ابہام نہيں رہنا چاہيے۔ يہ عناصر خود کو سياسی فريق کے طور پر پيش کرنے کی خواہش تو رکھتے ہيں تاہم اختلافات اور تنازعات کو ختم کرنے کے ليے ان کے طريقہ کار اور سوچ سے يہ واضح ہے کہ ان کے اعمال ان کے بيانات اور دعوؤں سے مطابقت نہيں رکھتے ہيں۔


    يہ کوئ اچنبے کی بات نہيں ہے کہ پرتشدد انتہا پسندوں کے مختلف گروہوں کے درميان سياسی اثر، طاقت کے حصول اور اپنی اجارہ داری کے ليے جاری مسلسل مڈبھيڑ بالآخر ايک خون آشام لڑائ کی صورت اختيار کر گئ اور اس کے ساتھ ہی ان مجرموں اور ان کی خود ساختہ مقدس جدوجہد کی حقيقت بھی سب پر آشکار ہو گئ۔


    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    digitaloutreach@state.gov

    www.state.gov

    https://twitter.com/USDOSDOT_Urdu

    USUrduDigitalOutreach - Home | Facebook

    https://www.instagram.com/doturdu/

    Us Dot | Flickr
  2. fawad

    fawad امریکی نمائندہ

    مراسلے:
    278
    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    داعش کی جانب سے اپنی کاروائيوں کے حوالے سے خود ساختہ "مقدس جدوجہد" اور "مذہبی فريضہ" جيسے الفاظ کا استعمال تو بہت کيا جاتا ہے مگر درحقيقت يہ تنظيم مجرموں کا ايک ايسا ٹولہ ہے جو اپنے مفادات کے تحفظ اور اپنے تسلط کو برقرار رکھنے کے ليے کسی بھی حد تک جا سکتا ہے۔

    ايک حاليہ رپورٹ ميں داعش کے سرغنہ کی جانب سے تنظيم پر اپنی گرفت برقرار رکھنے کے ليے حاليہ فيصلے کو اجاگر کيا گيا ہے جس کے مطابق البغدادی نے اپنے ہی 300 ساتھیوں کے قتل کا حکم جاری کيا ہے۔

    https://www.iraqinews.com/iraq-war/...ollowers-to-be-killed-for-disloyalty-reports/

    يہ بھی کوئ اچنبے کی بات نہيں ہے کہ دہشت گرد تنظيموں کے مختلف دھڑوں کے درميان سياسی اثر، طاقت کے حصول اور اپنی اجارہ داری کے ليے جاری مسلسل مڈبھيڑ بالآخر ايک خون آشام لڑائ کی صورت اختيار کر جاۓ اور اس کے ساتھ ہی ان مجرموں اور ان کی خود ساختہ مقدس جدوجہد کی حقيقت بھی سب پر آشکار ہو جاۓ گئ۔

    داعش کی قيادت کے مابين بڑھتی ہوئ چپقلش کسی کے ليے بھی باعث حيرت نہيں ہونی چاہيے کيونکہ جس محرک اور سوچ نے انھيں اس بات پر قائل کيا تھا کہ وہ اپنے اہداف يکجا کر ليں وہی يہی تھی کہ اپنے مفادات کا تحفظ کيا جاۓ اور خوف اور دہشت کے ذريعے عوامی سطح پر اپنی سوچ مسلط کی جاۓ۔

    اب يہ بات واضح ہو چکی ہے کہ ان کے خود ساختہ دعوؤں کے برعکس ان کی پرتشدد مہم کے پيچھے صرف يہی سوچ کارفرما ہے کہ عوام پر خوف کے ذريعے سے اپنی مرضی چلائ جاۓ۔


    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    digitaloutreach@state.gov

    www.state.gov

    https://twitter.com/USDOSDOT_Urdu

    Security Check Required

    Digital Outreach Team (@doturdu) • Instagram photos and videos

    Us Dot | Flickr

اس صفحے کی تشہیر