جھوٹی زینت

بنت مشتاق نے 'متفرق موضوعات (خواتین)' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏16 فروری 2014

  1. بنت مشتاق

    بنت مشتاق رکن

    مراسلے:
    150
    جھوٹی زینت

    یہ چھوٹی زینت عصر حاضر کی ہی پیدا وار نہیں ہے ۔ امام مسلم نے سیدنا ابو سعید خذری رضی اللہ عنہ سے روایت کی ہے کہ نبی اکرم ﷺ نے ارشاد فرمایا:

    "بنی اسرائیل میں ایک کوتاہ قد خا تون تھی ، جو دراز قدا والی دو عورتوں کے درمیان چلا کرتی اور اس نے لکڑی کی دو ٹانگیں بنوا لی تھیں ۔ ( ہمارے زمانے میں اونچی ایڑی والی عورتوں کے جوتے ہیں جنہیں پہن کر وہ اونچا بننے کی کوشش کرتی ہیں۔) اور ایک سونے کی انگوٹھی بنوائی جس پر مٹی سے بنا ہوا غلاف چڑھایا۔ پھر اس میں اعلیٰ قسم کی خوشبو بھری ۔ پھر وہ ان دراز قد عورتوں میں سے چلتی ہوئی لوگوں کے سامنے سے گزری ۔ جسے وہ پہچان نہ سکے ۔ تو اس نے اپنے ہاتھ کو یوں ہلا کر دکھایا۔۔۔۔" مسلم شریف کے علاوہ دوسری روایت میں یہ بھی آتاہے کہ " جونہی اس کا مردوں کی محفل کے پاس سے گزر ہوتا وہ اپنے ہاتھ کو یوں حرکت دیتی ۔ جس سے خوشبو پھیل جاتی ۔"

    امام عبد الر زاق نے صحیح سند کے ساتھ جناب عروہ سے سیدہ عائشہ رضی اللہ عنہا سے بات نقل فرمائی ہے کہ " بنی اسرا ئیل کی عورتیں لکڑی کی ٹانگیں بنوا کر مسجد میں مردوں کے سامنے اونچی ہو ہو کر چلا کرتی تھیں۔ تو اللہ تعالیٰ نے ان کا مسجدوں میں داخلہ حرام قرار دے دیا اور ان پر " حیض کے چیتھڑے مسلط کر دئیے گئے"۔

    رسول اللہ ﷺ نے سابقہ ہلاک ہونے والے یہود و نصاریٰ اور دیگر امتوں کی راہوں پر چلنے سے خبردار فرمایا ہے ۔ ایک ایمان دار ، عقلمند خاتون یہ بات جانتی ہے کہ وہ زینت کیسے حاصل کرے ، کب زیبائشی اختیار کرے اور کس کے لیے!!؟؟
    اصل کتاب کا تعارف
  2. نسرین فاطمۃ

    نسرین فاطمۃ رکن

    مراسلے:
    531
    جزاک اللہ خیرا سسٹر

اس صفحے کی تشہیر